آذان و نماز کا احترام

امام احمد بن حنبل کے پڑوس میں ایک لوہار رہتا تھا جب وہ فوت ہوا تو ایک محدث نے انکو خواب میں دیکھا پوچھا کہ فرمائیں کیا معاملہ پیش آیا ۔ لوہار نے کہا کہ مجھے امام احمد کے برابر درجہ ملا ہے ۔ اور اللہ مجھ سے راضی ہے ۔ وہ محدث بڑا حیران ہوا کہ یہ تو ایک عام سا دنیادار لوہار تھا جبکہ امام احمد تو دین و دنیا کے مسائل سمجھاتے قرآن و احادیث کا علم پھیلاتے کتنی مشکلات کا سامنا کیا ۔
اس محدث نے دوسرے علما کو یہ بات بتائی تو سب نے مشورہ کیا کہ ہم لوہار کے اہلہ خانہ سے پتہ کرنا چاہیے۔ وہ انکے گھر چلے گئے ۔ اس محدث نے پوچھا " بی بی آپکے شوہر کو ہم نے بہت اچھے درجے میں دیکھا ہے کیا آپ انکے کسی حاص عمل کا علم رکھتی ہے جو انکے زندگی میں عام تھا ۔ لوہار کی بیوی نے کہا کہ میرا شوہر کوئی حاص عمل نہیں کرتا تھا وہ ایک دنیا دار انسان تھا ۔ سارا دن وہ لوہے کا کام کرتا تھا ۔
میرے شوہر کے دو نمایاں عمل جو میں نے محسوس کیے ان میں ایک تو یہ کہ انکے اندر آذان و نماز کا بے حد احترام تھا ۔ اگر لوہے پہ ضرب مارنے کے لیے کھبی انکا ہاتھ اوپر ہوتا اور اسی وقت اللہ اکبر کی آواز آتی تو آپ اسی وقت اپنا ہاتھ نیچے کرلیتے وضو کرتے اور نماز پڑھنے چلے جاتے۔
دوسری بات یہ کہ میرے شوہر سارا دن دکان پہ مصروف ہوتے رات کو ہم چھت کے اوپر سوتے ہمارے  پڑوس میں امام احمد بن حنبل رہتے تھے جو ساری ساری رات قرآن کی تلاوت کرتے میرے شوہر حسرت سے انکی طرف دیکھتے اور ٹھنڈی آہیں بھرتے اور اللہ سے دعا کرتے کہ یااللہ میں بے حد غریب انسان ہوں آپ سے میرا کچھ چھپا نہیں اگر میری کمر ہلکی ہوتی تو میں بھی اس طرح امام صاحب جیسے ساری رات قرآن پڑھا کرتا تھا ۔ کھب کھبی میرے شوہر یہ دعا کرتے ہوے رونے لگ جاتے ۔
اس محدث نے کہا کہ آذان کے ادب اور نیکی کرنے کی تڑپ کی وجہ سے ہی اللہ پاک نے آپکے شوہر کی مغفرت کی ہے اور انکو امام حنبل کے برابر درجہ دیا ہے ۔
ہمارے بچپن میں جب آذان ہوتی تھی تو ٹی وی بند کردیا جاتا کہ آذان ہورہی ،پھر وقت آیا جب آذان کے وقت ٹی بند کرنے کی روایت ختم ہوئی اور بس آواز بند کرنے پہ اکتفا کیا گیا ۔ وقت گزر گیا اور آج آذان بھی ہورہی ہوتی ھے اور سٹار پلس بھی چلتا ہے۔
شیئر کیجیے اور اس پیغام کو دور دور تک پھیلانے میں ھمارے مددگار بنیئے.. یہ صدقہ جاریہ ھے..!! فرقہ واریت اور مسلکی تعصب سے پاک ایک خالص اصلاحی گروپ(اصلاح امت).. جہاں ھم امت مسلمہ کے اتحاد و اتفاق کے لیے کوشاں ھیں....

Comments

Popular posts from this blog

Khuda Karay K Meri Arz -e- Pak Par Utray

ME as Author for KMB!!!

UFONE GPRS mystery